مردہ لوگوں 103

مردہ لوگوں کے سننے کی صلاحیت کتنی زیادہ ہو تی ہے؟ حضور پاک ﷺکا فرمان سامنے آگیا

مردہ لوگوں کے سننے کی صلاحیت کتنی زیادہ ہو تی ہے؟ حضور پاک ﷺکا فرمان سامنے آگیا

فتح مبین جنگ بدر میں قریش کے قتل ہونے والے نام نہاد سرداروں اور ان کے حواریوں کوایک گھڑا کھود کر اس میں پھینک دیا گیا تا کہ ان کو داس گڑھے میں اجتماعی دفن کیا جاسکے۔ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم فرماتے ہیں: ہم نے آدھی رات کو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی آواز سنی۔

وہ فرمارہےتھےاے “گڑھے کے لوگو ، تم نبی کا کتنا ہی بُرا کنبہ تھے، تم نے مجھے! جب دوسرے لوگوں نے میری تصدیق کی تو تم نے مجھے انکار کیا۔”

تم نے مجھے گھر سے نکال دیا جب دوسروں نے مجھے پناہ دی، تم نے مجھ سے جنگ کی، جبکہ لوگوں نے میری نصرت کی“پھر سرکار دوجہاں ﷺ نے سرداران قریش جو نعشوں تلے دبے اس گڑھے میں پڑے تھے،انہیں اور انکے دیگر ساتھیوں کومخاطب کیا”


اور عتبہ ابن ربیعہ او، شیعبہ ابن ربیعہ ،او امیہ ابن خلف ،او ابو جہل ابن ہشام ، کیا آپ نے اپنے رب کا وعدہ پورا ہوتا دیکھا ہے؟ میں نے اپنے رب کا وعدہ پورا ہوتے دیکھا ہے۔ “صحابہ نے عرض کیا ،” اللہ کے رسول ، کیا آپ ان لوگوں سے مخاطب ہو رہے ہیں جو مر چکے ہیں؟ آپﷺ نے جواب میں فرمایا” میں جو باتیں ان سے کر رہا ہوں،تمھاری سننے کی صلاحیت ان سے زیادہ نہیں ہے، تاہم یہ جواب دینے کی قدرت نہیں رکھتے“

یہ بھی پڑھیں۔“ارطغرل غازی” کے سحرمیں مبتلا پاکستانی ان کے مقبرے کی زیارت کے لیے بے تاب!ترک ائیرلائن میں اب تک کتنی بکنگ ہو چکی؟نیا ریکارڈ قائم کردیا

یہ بھی پڑھیں۔حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کےپاس ایک آدمی آیا اور کہا کے مجھے رات کو صیح نیند نہیں آتی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں